سینی ٹائزر سے لڑکیاں الرجی کا شکار،آنکھیں سرخ، ہاتھوں پر خارش،آخر کب تک؟

ملبورن( جیٹی نیوز) کرونا نے جہاں مردوں کو اپنا شکار بنایا ہے تو وہاں گھر بیٹھی دوشیزاﺅں کو بھی تگنی کا ناچ نچا دیا ۔ نرسیں ہوں،لیڈی ڈاکٹرز ہوں یا پھر طالبات ،اتنی مرتبہ ساری زندگی ہاتھ نہیں دھوئے ہو نگے جتنا دو ماہ میں دھونے پڑ گئے ہیں لیکن اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ سینی ٹائزر سے ہاتھوں ،چہروں اور آنکھوںمیں الرجی کی شکایات بڑھ رہی ہیں۔

آنکھوں میں جلن ہوتی ہے، ہاتھ یا بازو جیسے ہی خشک ہوتے ہیں ان پر خارش ہونے لگتی ہے، لڑکیوں کی جلد چونکہ نازک ہوتی ہے جبکہ ایک ہزار سینی ٹائزر کی مقدار میں 750 گرام الکحل بھی شامل ہوتی ہے، جس کے باعث جلد خشک در خشک ہوتی چلی جا رہی ہے۔بعض لڑکیاں تو چوبیس گھنٹے میں 15،15 مر تبہ ہاتھوں کو سینی ٹائزر سے دھو رہی ہیں ،نازک اندام لڑکیوں کی کہنیوں تک الرجی کی شکایات بڑھ چکی ہیں۔ آنکھوں میں جلن بھی ہوتی ہے، کچھ کو خشک خارش بھی رہنے لگی ہے۔ ماہرین جلد نے مشورہ دیا ہے کہ سینیٹائزر کا استعمال دن میں صرف دو سے تین مرتبہ کیا جائے تا کہ ان کی جلد مزید خشک ہونے سے بچ جائے۔

girls jtn 1

 

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.