اتفاق،قتل ہونیوالی 19 سالہ ایا ہاشم کا والد بھی قتل ہوا،تین سگے بھائی گرفتار

لندن (جیٹی نیوز) لنکا شائر کی رہائشی 19 سالہ ایا ہاشم جسے بر لب سڑک قتل کر دیا گیا تھا،پولیس نے اس کے قتل کے شبہ میں تین بھائیوں کو گرفتار کر لیا ہے ،پولیس کے مطابق تینوں بھائی ایا ہاشم کے قتل میں ملوث ہیں اور ان میں سے ایک بھائی نے ہی ایا ہاشم کو سینے میں گولی مار کر قتل کیا تھا۔

پولیس نے قتل کے شبہ میں بلیک برن سے تعلق رکھنے والے تین بھائیوں 39 سالہ فیروز ، 39 ، سہیل ، اور 33 سالہ ندیم سلیمان کو ان کے گھر پر چھاپہ مار کر قتل کر دیا تھا۔پولیس نے اس کے علاوہ بھی تین مزید افراد کو حراست میں لیا ہے جن پر شبہ ہے کہ انہوں نے قاتلوں کی معاونت کی تھی۔

ادھر پولیس نے ایا ہاشم کے قتل سے متعلق کنگ روڈ پر نصب کیمروں کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی جاری کی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ ٹویوٹا ایوینسیس ایا ہاشم کا تعاقب کرتے ہوئے آگے کو بڑھتی ہے اور پھر اس کے قریب آ کر آہستہ ہو جاتی ہے ،اس دوران گاڑی کے شیشہ کھلتا ہے اور ایک ہاتھ باہر نمودار ہوتا ہے جس سے فائرنگ ہوتی ہے۔

سینے پر گولی لگنے کے نتیجے میں ایا ہاشم زمین پر گر جاتی ہے جبکہ گاڑی تیزی سے آگے بڑھ جاتی ہے۔پولیس قتل کی تفتیش کو ایک نئے رخ سے بھی دیکھ رہی ہے کہ ملزمان ایا ہاشم کو جانتے بھی نہ تھے ،گولی غلطی سے ایا ہاشم کو جا لگی ،فوٹیج کے مطابق ملزمان کا مقصد ٹائر شاپ کو نشانہ بنانا تھالیکن گولی غلطی سے ایا ہاشم کے سینے پر جا لگی۔

اس شبہ کو اس حوالے سے بھی تقویت ملتی ہے کہ 39سالہ ملزم فیروز ر ٹائرس کا ڈائریکٹر ہے اور اس کے بلیک برن میں تین گیراج ہیں ، اس میں کار واش بھی شامل ہے۔پولیس جاننا چاہتی ہے کہ آخر ایا ہاشم کو مخصوص دکان کے سامنے ہی کیوں گولی کا نشانہ بنایا گیا،یا پھر ایسا نشانہ چونکنے سے ہوا۔

ایا ہاشم کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ خوفناک حالات میں ان کی انتہائی خوبصورت بیٹی کو چھین لیا گیا ہے۔ دریں اثنا یہ اتفاق ہے کہ ایا ہاشم کے والد اسماعیل لبنان میں 10 سال قبل گولی لگنے سے ہلاک ہوئے تھے اور ان کی فیملی بہتر زندگی گزارنے کیلئے برطانیہ شفٹ ہوئی تھی اور انہوں نے سیاسی پناہ کیلئے اپلائی کیا تھا ۔ تاہم ابھی تک اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ ایا ہاشم کو جان بوجھ کر قتل کیا گیا تھا۔ پولیس نے اس کے قتل کے الزام میں نو افراد کو گرفتار کیا ہے۔

jtn innocent women3

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.